نمائندہ چنگاری ڈاٹ کام

10فروری 2019 بروز اتوار بعد دوپہر 3 بجے سے شام 6 بجے تک جرمنی کے میٹرول پولیٹن سٹی فرینکفرٹ  کے ایک بڑے حال میں پاک حیدری ایسوسی ایشن جرمنی جوکہ   1987 سے فرینکفرٹ میں  رجسٹرڈ ہے  پہلی بار  27 سال بعد   مقامی قوانین کے تحت ایک جمہوری انتخابات ہوئے ۔ جس میں خواتین و حضرات کی ایک بڑی تعداد نے  خراب ترین موسم کے باوجود   بڑے جوش وخروش  سے بھر پور حصہ لیا  اور اپنی آئندہ  5 سال کے لیے نئی قیادت کا انتخاب کیا ۔  پاک حیدر ی ایسوسی ایشن  کی نئی کابینہ میں صدر ،سید صبور نقوی ۔ نائب صدر ، سید صفدر عباس ۔ جنرل سیکرٹری ،   شاہد علی خان ۔ ڈپٹی سیکرٹری جنرل ، زین اختر ۔ فنانس سیکرٹری ،  سید ابرار  الحسن ۔  ڈپٹی فناس سیکرٹری غضنفر حسین ۔ اور پریس سیکرٹری ، علی ذیشان  شامل ہیں  جنکو 156 ووٹ ملے جبکہ مخالفت میں 3 ووٹ آئے  ۔ مد مقابل  کھڑے ہونے والے پینل نے چند دن   قبل ان الیکشن میں حصہ لینے سے انکار کر دیا  اور چند ناخوش گوار واقعات  بھی رونما ہوئے ۔  مخالفین نے ان الیکشن کو روکوانے  اور ناکام کرنے کی بہت سی جسمانی ، غیر اخلاقی  اور  غیر جمہوری  کوشیش کئیں جو قابل بیان نہیں ہیں۔ یہاں تک کی ایک دن قبل  ھال کی  بکنگ بھی منسوخ  کراوئی گئی جس میں الیکشن ہوئے ۔

تنظیم  کے اندر  تضادات   اور گروپنگ  کا ابھرنا  اس لیے ناگزیر تھا کہ  سانئسی  طور پر کوئی بھی جماعت یا تنظیم ایک لمبے عرصے تک غیر جمہوری نہیں رہ سکتی اور خاص طور پر جب اس کی تعداد میں  کافی اضافہ ہو چکا ہو ایک وقت پر تنظیم کا بھاری پن اس کا گلہ گھونٹنے   لگتا ہے  اور یہ دباو اکثر اوقات اسی  طرح پھٹتا ہے  اور نیچے سے ابھرنے والی نئی قیادت پرانوں کا تختہ دھڑام کر دیتی ہے ۔  جو یہاں ہوا اور اسی وجہ سے یہاں آئے  ہوئے ممبران اور قیادت میں جوش و لوالہ بڑا نمایاں تھا ۔

اس الیکشن میں صرف تنظیم کے ممبران کو  خفیہ رائے شمار ی سے ووٹ ڈالنے کا حق حاصل تھا ۔ جبکہ ممبران کے علاوہ بھی بہت سے افراد  وہاں   موجود تھے جنہوں نے ووٹ نہیں ڈالا ۔

ایسی تنظیمیں ملوکیت پر مبنی ہوتی ہیں ۔ اس لیے اب تک   وہی پرانے چند بابوں کی چوہدراہٹ  اور غلبہ تھا  جو ہمیشہ  اپنی ہی نامز دگیوں سے سلیکٹ  ہوتے رہے  جبکہ  تعداد 27 سال میں کافی بڑھ چکی تھی اور خاص طور پر  جرمنی میں پیدا  ہونے والے یا پرورش پانے والے   نوجوان کی کافی تعداد  یہاں موجود تھی جن کی سوچ  پاکستان سے آئے افراد کی طرح   مسخ شدہ  ، کنفوژ اور  حاکمانہ  نہیں تھی    جو یقینا پرانے بابوں  کومانے سے انکار ی تھے  ۔ بقول  فیض نوجوان ہی ہیں جو ،، ہمت کفر  ،، کر سکتے ہیں  جو انہوں نے کیا  اور 27 سالہ قیادت کو مسترد کر دیا ۔

پرانے بابوں  کی طرح خود ساختہ  اپنے آپ کو مقامی نمائندہ پریس  کہنے والا  گروہ بھی گدھے کے سر پر سنیگ کی طرح غائب تھا  پریس سیکرٹری کے مطابق   انہیں خاص طور پر نیوز اور ٹیلی فون کے زریعے مطلع کیا گیا ۔ ان کے نہ آنے کی وجہ پرانے بابوں کی  جو یہاں نہیں آئے  ان کی عاجزنہ تعبداری  اور فرمابرداری تھی  جس کا انہوں نے بہترین ثبوت دیا ۔ ویسے بھی انجمن تاجران فرینکفرٹ پر مقامی پریس  ہونے کا خود ساختہ ٹھپا ہی ہے ۔ جو  سفارتی عملے اور بڑے ناموں کے ساتھ کوٹ پینٹ اور ٹائی لگا کر اپنی  غلامانہ تصویروں کی نمائش کر کے اپنے آپ کو زبردستی  صحافی ثابت کرنے کی دن رات  ذلت آمیز کوشیش میں لگے رہتے ہیں۔ مخالفین  پر   پیچھے  سے کسی گھٹیا ملا کی طرح   ملحد، ملک اور اسلام دشمن   کے نفرت آمیز فتوے لگانے میں بڑے شیر ہیں اس کے باوجود کے یہ تاریخ اسلام  اورتاریخ پاکستان کے قریب سے بھی نہیں گزرے اور فلسفے کی تو ا ب سے بھی واقف نہیں۔

پاکستان سے باہر پاکستانیوں کی سیاست  ، صحافت اور ثقافتی سرگرمیاں مقامی لوگوں اور تحریکوں سے کٹ کر نہیں ہونی چاہیے  وگرنہ ہم ان سے الگ ایک گیٹو کی شکل اختیار کر کے اپنی موت خود مر جائیں گئے اور آنے والی اپنی نسلوں کو برباد کر دیں گئے  ۔ اس کے لیے بہت ضروری ہے کہ ہم  اپنی  سماجی سرگرمیوں کو صرف شعوری نہیں بلکہ معیاری شعوری اور جمہوری بنائیں کھلے ذہن اور وسیع ظرف کواپنائیں مقامی علم و ادب کا مطالعہ کریں اور ایک بہترین شہری    کی مثال اپنے آنے والی نسلوں کے لیے بنے نہ کہ تفرقہ پروری اور شاونزم  کا زہر اپنی نسلوں میں پھیلا جائیں ۔

پاک حیدری ایسوسی ایشن کی نئی کابینہ نے اپنی کامیابی کے بعد   تما م  مہانوں اور ممبران کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا اور اس کا اعادہ کیا کہ وہ  پاکستانیوں اور مسلمانوں میں بھائی چارے اور اتحاد کے فروغ  کی ہر ممکن کوشیش کریں گئے اور ساتھ ہی   مذہب  میں لڑائیوں  ، نفرتوں اور اسلام کے نام پر ہر دہشت گردی کی خلاف جدوجہد  کا عزم کیا۔  

مزید پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں

چنگاری پبلیکشنز کی امازون پر کتابیں 

 

 

0
0
0
s2smodern

Comments   

-1 #4 Muzamil Kazmi 2019-02-11 20:39
Greet
Muzamil Kazmi
Finland
Quote
-1 #3 علی حیدر۔ ڈنمارک 2019-02-11 20:37
زبردست۔ چنگاری
علی حیدر
ڈنمارک
Quote
-1 #2 معظم علی ۔ نیو یارک 2019-02-11 20:35
پاک حیدری کو بہت بہت مبارک
ایک سچا صحافتی مضمون ہے۔
معظم علی
امریکہ ۔ نیویارک
Quote
-1 #1 سید علی عباس لندن 2019-02-11 20:31
زبردست بہت اچھا اور سپ لکھا ہے ۔ نئی قیادت کو مبارک ہو
سید عباس علی
لندن، برطا نیہ
Quote

Add comment


Security code
Refresh