ان بدترین سیاسی، معاشی وسماجی حالات کا شکار سماج کا جزو اول یعنی خواتین ہیں جن کو عقل و شعور اور جسمانی طاقت کے لحاظ مرد سے کمتر سمجھا جاتا ہے اسی بنا پر ان کوبورژوا دانشور نام تو صنف نازک کا دیتے ہیں 

0
0
0
s2smodern

مارکسزم دنیا کی واحد سائنس ہے جس نے تاریخ میں پہلی مرتبہ عورت کے استحصال کی مادی اور تاریخی بنیادوں کو واضح کیا۔ اس سے پیشتر اور اس کے بعد کے تمام فلسفے اور سماجی علوم عورت کی آزادی اور عورت کے تاریخی کردار کو خیال پرستانہ نقطہ نظر سے پرکھتے تھے چاہے وہ مذہبی علوم ہوں یا جدید سماجی علوم۔ خواتین پر جبر کو ہمیشہ ایک اخلاقی مسئلہ بنا کر پیش کیا گیا۔ 

0
0
0
s2smodern

مریکی پاکستان سے اقوام متحدہ کی طرف سے دہشت گرد قرار دی گئی تنظیموں اور افراد جیسا کہ حقانی نیٹ ورک، حافظ سعید، جیش محمد، لشکر طیبہ اور جماعت الدعوۃ وغیرہ کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ جون میں ہونے والے اجلاس میں پاکستان کو ان دہشت گرد تنظیموں کے حوالے سے اپنا پلان آف ایکشن دینا ہو گا اور اگر 

0
0
0
s2smodern

سرمایہ دارانہ نظام جہاں باقی زندگیوں کے لیے ایک خطرناک سرطان کی صورت اختیار کر چکا ہے وہیں پر عورت کے استحصال کا سوال بھی بہت اہمیت اختیار کر چکا ہے۔ عورت کے استحصال پر سوال تو بہت ہیں لیکن اس نظام میں جواب نداردہیں۔ آخر کون دے گاان سوالوں کے جواب

0
0
0
s2smodern

پاکستان کی سامراجی ریاست گلگت بلتستان کی عوامی تحریک سے خوفزدہ ہو کر انتقامی کاروائیوں میں شدت لے آئی ہے۔ تحریک کو مذہبی فرقہ وارانہ بنیادوں پر تقسیم کرنے کے لیے اس نے اپنے کارندے متحرک کر دیے ہیں اور ملک کے دیگر حصوں کی طرح یہاں بھی مذہبی منافرت کا زہر ایک دفعہ پھر پھیلانا شروع کر دیا ہے

0
0
0
s2smodern

نقیب اللہ محسود کے قتل کیخلاف ابھرنے والی تحریک تھمنے کی بجائے تیزی سے پھیل رہی ہے۔ کراچی میں راؤ انوار جیسے خونی درندے کے ہاتھوں اس بہیمانہ قتل کے بعد ابھرنے والی یہ تحریک پشتونخوا اور بلوچستان کے وسیع حصوں تک پھیل گئی تھی۔ اسلام آباد میں کئی روز تک جاری رہنے والے دھرنے میں ہزاروں افراد نے

0
0
0
s2smodern

نقیب شہید کو ریاستی مشینری کے غنڈے راؤ انوار نے کراچی میں ایک جعلی پولیس مقابلے میں قتل کیا تھا، جو کہ تازہ ترین معلومات کے مطابق بھتہ نہ دینے کی وجہ سے پیش آیا۔ کراچی کے اندر اس طرح کے جعلی مقابلوں میں سینکڑوں کی تعداد میں معصوم جانیں ریاستی اداروں کی دہشت گردی کا نشانہ بن چُکی ہیں

0
0
0
s2smodern

ہم سال 2018ء میں محنت کش خواتین کا عالمی دن انتہائی غیر معمولی حالات میں منانے کی طرف جا رہے ہیں۔ سرمایہ دارانہ بحران کے دس سالوں نے دنیا کا نقشہ بدل کر رکھ دیا ہے، بحران سے پہلے سیاسی افق پر سکوت ایک معمول تھا، لیکن دس سال سے جاری اس معاشی بحران میں تحریکیں اور بغاوتیں ایک نیا معمول بن چکی ہیں

0
0
0
s2smodern

عام محنت کشوں نے مختلف یونینوں اور ایسو سی ایشنوں کی حد بندیوں سے بالا تر ہو کرادارے کے ملازم ہونے کے احساس کی جڑت کے ساتھ تحریک کو آگے بڑھانے کی کوشش کی 

0
0
0
s2smodern

ان عدالتوں کی تاریخ اس دھرتی پر ہونے والے ہر ظلم کی پشت پناہی اور اس کو آئینی اور قانونی تحفظ دینے کی تاریخ ہے۔ بدعنوانی اور لوٹ مار کی غلاظت میں ڈوبا ہوا یہ ریاستی ادارہ آج اپنے ہی پالتو سیاستدانوں سے گتھم گتھا ہے اوراس لڑائی میں بہت سے راز افشا ہو رہے ہیں

0
0
0
s2smodern

نقیب کا قتل اس ناکام ریاست کے عمومی کردار کو واضح کرتا ہے کہ یہ ریاست اور اس کے ادارے کس حد تک گل سڑ چکے ہیں۔اس واقعے نے واضح کر دیا کہ ریاست کے ادارے بری طرح کھوکھلے ہو چکے ہیں اور اس عمل میں سماج میں شدید غلاظت پھیلانے کا باعث بن رہے ہیں

0
0
0
s2smodern