ڈرائنگ روم کے قنوطی دانشور اور بورژوا سیاستدان کہتے ہیں کہ بلوچستان کے اندر محنت کش طبقہ وجود نہیں رکھتا، تو بلوچستان کے اندر صرف اپریل 2016ء سے لے کر اب تک محنت کش طبقے کے احتجاجوں اور ہڑتالوں پر نظر دوڑانے سے ہی یہ بات واضح ہو جاتی ہے کہ بلوچستان کے اندر محنت کش طبقہ نہ صرف وجود رکھتا ہے بلکہ جدوجہد کے میدان میں بھی سرگرم عمل ہے۔

0
0
0
s2smodern

پاکستان میں طلبہ سیاست کی طویل تاریخ سات دہائیوں پر مشتمل ہے۔ اپنے جنم سے لے کر اب تک یہ مد و جزر کا شکار رہی ہے۔ عالمی سطح پر ابھرنے والی تبدیلیاں ہو ں یا ملک میں ابھرنے والی مختلف تحریکیں یہاں کی طلبہ سیاست ان تمام اثرات کو اپنے اندر سمیٹتے ہوئے آگے بڑھتی رہی ہے

0
0
0
s2smodern

یوں تو ہر سال اس ملک کے بے شرم حکمران اور نا اہل ریاستی مشینری نام نہاد آزادی کا جشن منا کر اور بھوکی ننگی عوام کو اس بیہودہ جشن میں ملوث کر کے اپنی خجالت کو دور کرنے کی کوشش کرتے ہی ہیں مگر اب کی بار تو ایسا لگ رہا ہے جیسے کوئی نئی نویلی آزادی ہاتھ لگی ہو

0
0
0
s2smodern

تاریخ سے نہ سیکھنے کا نتیجہ تاریخ کو دہرانا ہوتا ہے۔ تاریخی واقعات، انسانی سماج کے معروضی حالات کا آئینہ ہونے کے ساتھ ساتھ ان کا ردعمل، اور انسانی نسل کو اپنے کردار سے سیکھنے کا موجب بھی ہوتے ہے

0
0
0
s2smodern

نواز شریف کیخلاف کرپشن کے الزامات لگائے گئے لیکن ان پر ابھی تک کوئی فیصلہ نہیں سنایا گیا۔ اسی طرح عمران خان پر اخلاق سوز حرکات اور خواتین کو ہراساں کرنے کے الزامات لگائے جا رہے ہیں

0
0
0
s2smodern

امریکی سامراج کی غلامی کا طوق پہنے یہاں کے غلام حکمران اپنی ماضی کی خدمات اور کاسہ لیسی کی داستان سنا کر آقا کوسخت رویہ اپنانے سے روکنا چاہتے ہیں جو اب ان کے منہ میں ڈالی جانے والی ہڈی بند کرنے جا رہا ہے

0
0
0
s2smodern

پاکستان کے کارپوریٹ میڈیا اور ریاستی اداروں میں پاکستان کی نام نہاد آزادی کے جشن کی بھرپور تیاریاں جاری ہیں، لیکن بلوچستان اور خصوصی طور پر کوئٹہ کے باسیوں کے لیے آج کا دن یومِ سیاہ کے طور پر منایا جا رہا ہے

0
0
0
s2smodern

ہماری نظر میں ان اموات کی اصل ذمہ دار پنجاب حکومت کی ہٹ دھرمی ہے جس کی وجہ سے آئے روز ہسپتالوں میں ہڑتالیں ہوتی رہتی ہیں۔ شہریوں کو مفت اور معیاری صحت کی سہولیات فراہم کرنا ریاست کی ذمہ داری ہے اور اسی طرح ینگ ڈاکٹرز سمیت ہسپتالوں میں کام کرنے والے تمام محنت کشوں کی معاشی ضروریات کو پورا کرنا بھی حکومت کا فریضہ ہے

0
0
0
s2smodern

ہندوستان کے خوانی بٹوارے کے 70سال بعد بھی گدھ نیم مردہ لاشوں کو نوچتے چلے جا رہے ہیں۔ایسا لگتا ہے کہ برطانوی سامراج کی مسلط کردہ تقسیم کے بعد برپا ہونے والے خونی مناظر آج بھی اسی طرح جاری و ساری ہیں

0
0
0
s2smodern

قدیم اشتراکی نظام میں مردوں اور عورتوں میں فرق صرف سماجی فرائض کے حوالے سے ہوتا تھا لیکن بقائے زندگی کی جنگ میں دونوں برابر کے شریک ہوتے تھے۔ جب انسان نے قدیم اشتراکی نظام سے غلام داری کی طرف سفر کا آغاز کیا تو 

0
0
0
s2smodern