فاٹا کو خیبر پختونخواہ میں ضم کرنے کا فیصلہ موجودہ امکانات میں سب سے زیادہ قابل عمل قدم ہے، تاہم اس عمل میں مجرمانہ تاخیر سے کوئی انکار نہیں۔ 7 ایجنسیوں اور 6 فرنٹیر ریجنز پر مشتمل یہ علاقے ’’آزادی‘‘ کے نام پر 1901ء سے انگریز سامراج کے مسلط کردہ ہولناک قوانین، ایف سی آر کی شکل میں بدترین غلامی کا طوق پہنے ہوئے تھے

0
0
0
s2smodern

موجودہ دور میں خواتین کے استحصال اور جبر کی وجوہات کو سمجھنا بہت ضروری ہے کیونکہ اس کے بغیر ان کا ازالہ نہیں کیا جا سکتا۔ آج کے تمام تر انسانی معاشروں میں خواتین کی اکثریت کے عمومی حالات، اس کی کم تر حیثیت، اس کا معاشی استحصال اور صنفی جبر کی جو انتہائیں ہمیں نظر آتی ہیں یہ ہمیشہ سے وجود نہیں رکھتی تھیں

0
0
0
s2smodern

پاکستان کا سماج ایک ایسا پریشر کُکر بنتا جا رہا ہے جو کسی بھی وقت ایک دھماکے کی صورت میں پھٹ سکتا ہے۔ یہاں کے دانشوروں کا سالہا سال تک سب سے مرغوب جملہ یہی رہا کہ ’یہاں کچھ نہیں ہو سکتا‘۔ اس مفروضے کو ثابت کرنے کے لیے طرح طرح کے دلائل دیئے جاتے تھے، نئی نویلی اصطلاحات بروئے کار لائی جاتی تھیں۔ ثقافتی، تاریخی، تہذیبی ہر طرح کے جواز گھڑے جاتے تھے

0
0
0
s2smodern

اسلام آباد لرز رہا ہے۔8 اپریل کو پشاور میں ہونے والا پشتون تحفظ موومنٹ کا جلسہِ عام ریاست کے لیے کسی بھونچال سے کم نہیں تھا جس میں ڈیڑھ لاکھ سے زائد افراد نے شرکت کی

0
0
0
s2smodern

یوں تو پاکستانی میڈیا پر دن میں کئی بار آئین و قانون کی بالادستی اور جمہوریت جمہوریت کی گردان سننے کو ملتی ہے اور اس عمل میں سیاسی پارٹیاں ہوں، مذہبی یا قوم پرست پارٹیاں، چاہے بیوروکریٹس ہوں یہاں تک کہ ریٹائرڈ اور حاضر سروس جرنیل بھی اس رٹے رٹائے سبق کو دہراتے نظر آتے ہیں۔ ہر مسئلے کا حل جمہوری عمل کے جاری رہنے میں پنہاں بتایا جاتا ہے اور جمہوریت کو مضبوط کرنے کا درس دیا جاتا ہے

0
0
0
s2smodern

8اپریل کے دن صبح سے ہی شرکا کے قافلے جلسہ گاہ پہنچنا شروع ہوگئے۔ پختونخوا اور ملک کے دوردراز سے تعلق رکھنے والے پشتون محنت کش اور نوجوان ریاستی جبر کو شکست دینے جوق درجوق جلسے کے مقام پر پہنچ رہے تھے

0
0
0
s2smodern

گزشتہ سات دہائیوں سے پاک و ہند دشمنی کو زندہ رکھنے کے لیے کشمیر کو تقسیم کرنے والی سرحد جسے کنٹرول لائن کہا جاتا ہے، کے آر پار بسنے والے غریب کشمیریوں کے خون کو پانی کی طرح بہایا جا رہا ہے۔ کنٹرول لائن پر پاک و ہندفوج کے مابین ہونے والی فائرنگ (جو فائربندی کے مختصر یا تھوڑے لمبے وقفوں کے ساتھ ہمیشہ جاری رہتی ہے)

0
0
0
s2smodern

یہ دھرنا مسلسل آٹھ روز تک کامیابی کیساتھ جاری رہا جس میں صوبہ بھر کے سیاسی و سماجی کارکنوں اور مختلف مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے افراد نے بھرپور انداز میں شرکت کی۔ خاص طور پر رکشہ اور ٹیکسی ڈارئیوروں کی ایک بڑی تعداد اس دھرنے میں شریک تھی

0
0
0
s2smodern

سال 2018ء کا یوم مئی ایک ایسے عہد میں منایا جائے گا جب سرمایہ داری کی تاریخ کا سب سے گہرا اور بد ترین بحران دسویں سال میں داخل ہو چکا ہے۔ گزشتہ ایک دہائی میں پورے کرۂ ارض پر تلاطم خیز تبد یلیاں رونما ہوئی ہیں۔ انقلابات اور رد انقلابات،جنگیں اور خانہ جنگیاں،پرانی سامراجی طاقتوں کا زوال اور نئی سامراجی قوتوں کا ابھار،کئی ریاستوں کا انہدام اور تیزی سے بدلتے ہوئے عالمی تعلقات

0
0
0
s2smodern

کسی بھی لڑائی کو جیتنے کے لیے جہاں اس لڑائی کے داؤ پیچ پر عبور کی ضرورت ہوتی ہے وہیں دشمن کی ممکنہ چالوں کو قبل از وقت بھانپ لینا بھی اہمیت کا حامل ہوتا ہے تاکہ یہ سمجھا جائے کہ کونسا داؤ کب کارگر ہو سکتا ہے۔تحریک کے حالیہ مرحلے پر ریاست کے لیے تحریک پر براہِ راست حملہ کرنا اتنا آسان نہیں ہے

0
0
0
s2smodern