آٹھائیس اکتوبر دو ہزار بارہ کو جرمنی کے شہر فرینکفرٹ میں چنگاری فورم جرمنی کے تحت اکتوبر انیس سو سترہ کو روس میں برپا ہونے والا بالشویک انقلاب کے پچانوں سال بعد بھی اسکی ٹھوس سچائی پر ایک تاریخ ساز شاندار پروگرام ہوا جس میں پاکستانیوں کی ایک بڑی اکثریت کے علاوہ جرمن اور انڈین ساتھیوں نے بھی بھر پور شرکت کی اور امریکہ سے آئے ہوئے ینگ سوشلسٹ رہنما نے بھی شرکت کی ۔ تمام ھال مکمل بھر ا ہوا تھا کیونکہ ہال میں پنتیس افراد کی جگہ تھی جبکہ چالیس افراد شامل ہوئے ۔ پروگرام چار زبانوں میں ہوا ۔جس میں انگریزی ، جرمن ، پنجابی اور اردو زبانوں پر بائیں بازو کے رہنماوں نے شاندار رتقاریں کیں ۔

سٹیج سیکرٹری کے فرائض چنگاری فورم کے جنرل سیکرٹری کامریڈ عبدالقدوس نے ادا کیے جبکہ امریکہ سے آے ہوئے عالمی مارکسی رجحان اور یوتھ سوشلسٹ رہنما رابرٹ پہلے تقریر کے لیے آئے ۔ جس کے بعد پاک یورو جرنلسٹس فورم جرمنی کے نائب صدر طاہر ملک نے ایک انقلابی گیت پیش کیا اور پاک یورو جرنلسٹس فورم کے سینئر وائس چیرمین اور فن و ادب کے سربراہ ارشاد ہاشمی نے اپنی ایک نہایت خوبصورت سوشلسٹ نظم پیش کی جس کے بعد انڈین سوشلسٹ تحریک کے آنکھی سنگھ نے ہندوستان میں بائیں بازو کی تاریخ پر ایک بہتریم مقالہ پیش کیا۔ چنگاری فورم کے چیرمین اور پاک یور جرنلسٹس فورم کے صدر دانیال رضا نے بالشویک انقلاب اور سٹالنزم کی زوال پذیر ی پر شاندار بڑی تفصیلی بحث کی انکے بعد جرمن جرنلسٹ یونین کے مرکزی رہنما اور جرمن ویب سائٹ ڈیر فونکے کے ایڈیٹر ہنس گیہرٹ نے یورپ کی موجودہ تباہ حال سرمایہ داری اور سوشلسٹ مستقبل پر وضاحت کی ۔ جس کے بعد سامعین میں سے جرمنی کی پارٹی ڈی لنکے کے سابقہ قومی اسمبلی کے امیدوار رولنڈ اور جرمن مزدور یونین کے رہنما ڈاکٹر ٹوم نے بحت میں حصہ لیا جبکہ میوزیکل گروپ کے سربراہ وسیم خلش نے دس نومبر کو چنگاری کے تعاون سے ہونے والے میوزیکل پروگرام کا اعلان اور اس کی تفصیل بتائی ۔اس کے بعد پروگرام کا باقاعدہ اختتام ہوا ۔لیکن گروپوں کی شکل میں سیاسی اور انقلابی گفتگو کئی گھنٹے تک جاری رہی ۔

یہ سوشلسٹ انقلابی پروگرام جرمنی میں پاکستانیوں کی تاریخ میں ڈاکٹر لال خان کے بعد یہ دوسرا پروگرام تھا ۔ یہ آغاز تھا جرمنی میں رہنے والے پاکستانیوں ، انڈین اور جرمنوں کی مشترکہ سوشلسٹ انقلاب کی جدوجہد کا جو مستقبل میں عالمی عوامی تحریک میں ایک سنگ میل کی حیثیت رکھے گا ۔

0
0
0
s2smodern

Add comment


Security code
Refresh